Chaa Jaaye Ga Ghazal By Rahmaan Faaris چھا جائے گا غزل از رحمان فارس

یاد رکھ خود کو مٹائے گا تو چھا جائے گا

عشق میں عجز ملائے گا تو چها جائے گا


اچھی آنکھوں کے پُجاری ھیں مرے شہر کے لوگ

تُو مرے شہر میں آئے گا تو چھا جائے گا

دیدہٗ خُشک میں بے کار سلگتا ھوا غم 

رُوح میں ڈیرے لگائے گا تو چھا جائے گا

ھم قیامت بھی اُٹھائیں گے تو ھوگا نہیں کچھ

تُو فقط آنکھ اُٹھائے گا تو چھا جائے گا

پھُول تو پھُول ھیں ، وہ شخص اگر کانٹے بھی

اپنے بالوں میں سجائے گا تو چھا جائے گا 

یُوں تو ھر رنگ ھی سجتا ھے برابر تجھ پر

سُرخ پوشاک میں آئے گا تو چھا جائے گا 

پنکھڑی ھونٹ ، مدھر لہجہ اور آواز اُداس

یار ! تُو شعر سُنائے گا تو چھا جائے گا 

جس مصور کی نہیں بِکتی کوئی بھی تصویر


تیری تصویر بنائے گا تو چھا جائے گا

جبر والوں کی حکومت ہے فقط چند ہی روز

صبر میدان میں آئے گا تو چھا جائے گا

Advertisements

Published by

Raheem Baloch

www.facebook.com/rjrah33m

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out /  Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out /  Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out /  Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out /  Change )

Connecting to %s